ڈی پی او پاکپتن کو سیاسی مداخلت کی بناء پر عہدے سے ہٹانے کیخلاف قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

لاہور (اے ٹی ایم آن لائن) تفصیلات کے مطابق قرارداد مسلم لیگ ن کی حنا پرویز بٹ کی جانب سے جمع کرائی گئی ۔ قرار داد کے متن کے مطابق پولیس کو غیر سیاسی کرنے کا نعرہ لگانے والی حکومت نے قانون کی دھجیاں اڑا دی ، پولیس کے نظام میں سیاسی مداخلت کے دعوے دھرے رہ گئے ، خاتون اول کے سابق شوہر خاور مانیکا کی انا کی خاطر ڈی پی او پاکپتن کو عہدے سے ہٹادیا گیا جو انتہائی قابل مذمت عمل ہے ، خاور مانیکا کو پولیس اہلکاروں نے ناکے پر روکا ، جس کی رنجش میں ضلع کے انچارج پولیس آفیسر کو خاتون اول کی مداخلت پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے عہدے سے ہٹادیا ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب ڈی پی او پاکپتن کو خاور مانیکا سے معازت کرنے پر مجبور کیا ، ڈی پی او کی جانب سے معازت نہ کرنے پر انتقامی کاروائی کا نشانہ بنایا جانا انتہائی غیر ذمہ دارانہ فیل ہے ، اس واقعے کے بعد انتہائی ایماندار اور فرض شناس آفیسر اور اہلکاروں کی حوصلہ شکنی ہوئی ہے ، لہذا یہ ایوان حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ ڈی پی او پاکپتن رضوان گوندل کو فوری پر بحال کیا جائے ۔ حکومت اس واقعے کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کیلئے انکوئرای کمیٹی بنائے اور ذمہ داروں کیخلاف قانون کے مطابق کاروائی عمل میں لائی جائے۔