پی ٹی آئی حکومت کے پہلےعشرےمیں6 بڑےبلنڈرز

لاہور(اے ٹی ایم آن لائن ) بلنڈرزاوریوٹرن میں شہرت یافتہ پی ٹی آئی کی مستقل مزاجی تاحال برقرارہے اور پی ٹی آئی نے اقتدار سنبھالنے کے بعد بھی بلنڈرزاور یوٹرنز کا دامن نہیں چھوڑاہے۔یوں بھی وزیراعظم عمران خان میڈیا پریوٹرن خان کے نام سے خاصے مشہورہیں۔نئی حکومت کی تشکیل کے بعد سب سے پہلا تنازع خارجہ پالیسی پرسامنے آیا۔ جب امریکی محکمہ خارجہ نے دعوی کیا کہ مائیک پومپیو اورعمران خان کے مابین ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں امریکہ کی جانب سے پاکستان میں سرگرم تمام دہشتگردوں کےخلاف فیصلہ کن کارروائی کی اہمیت پرزوردیاگیا لیکن پاکستان نےاس امریکی بیان کو حقائق کے منافی قراردیتےہوئےیکسرمسترد کردیا۔دوسرا یوٹرن وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے لیا جس میں انہوں نے بھارت کی جانب سے پاکستان کو مذاکرات کی دعوت دینے کادعویٰ کیا لیکن ہمسایہ ملک بھارت نے اس کی سختی سے تردید کرڈالی۔ پی ٹی آئی کی طرف سےتیسرا بلنڈرگورنربلوچستان کے لیے ڈاکٹر امیر محمد کا نام اناؤنس کرنے کی صورت میں سامنے آیا۔نیب میں ڈاکٹر امیر محمد کیخلاف کیسزکی خبریں سامنے آنے پرپی ٹی آئی کی قیادت اپنے فیصلے سے ہی مکر گئی۔وزیرریلوے شیخ رشید بھی پی ٹی آئی کےرنگ میں رنگ گئے۔دوران اجلاس وہ اعلیٰ افسروں کے ساتھ انتہائی بدتمیزی سے پیش آئے۔ ریلوے کی آمدن بڑھانے سے متعلق ایک افسر کی تجاویز پرشیخ رشید نےاپنے رد عمل میں کہا کہ ’’ مجھے رضیہ بٹ کا ناول نہ سناؤ‘‘۔ چیف کمرشل منیجر حنیف گل بولے کہ جناب منسٹرصاحب تجاویز دینے والا انتہائی قابل اور محکمے کا سینئرافسر ہے یہ سننا تھا کہ شیخ رشید آگ بگولا ہوگئے اورکہا کہ” شٹ اپ” ۔جواب میں حنیف گل’’یو شٹ اپ‘‘ کہہ کر اجلاس سے چلے گئے۔وفاقی وزیر کے غیر مہذب رویے پر مذکورہ افسر نے دو سال کی رخصت طلب کرلی۔تحریک انصاف کی جانب سے پانچواں بلنڈر اوورسیز پاکستانیوں کے دفتر کوزبردستی تالے لگاناتھا۔ میڈیا پرخبر چلنے کے بعد پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے فوری پلٹی مارتے ہوئے خبر کو جھوٹا قراردے ڈالا۔پریس ریلیزمیں موقف اختیارکیا کہ نامزد گورنرپنجاب چودھری سرورکی ہدایات پر اس کمشن کو مزید فعال بنایا جائیگا ۔قانونی ماہرین کے نزدیک گورنرکے پاس ایسا کوئی اختیارنہیں کہ وہ کمشن میں مداخلت کرے۔انصاف اور قانون کے نام پر طمانچے جیسا چھٹا بلنڈرخاور مانیکا کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ تھا جس میں ڈی پی او پاکپتن رضوان عمر گوندل کوتبدیل کردیا گیا ۔تبدیلی کا نعرہ لگاتی پی ٹی آئی کی حکومت نجانے اور کتنے یوٹرن اور بلنڈرزمارے یہ تو وقت ہی بتائے گا۔