صدارتی امیدوار ڈاکٹر عارف علوی کی اہلیت پر خطرے کے بادل منڈلانے لگے

لاہور (اے ٹی ایم آن لائن ) عارف علوی کی آمدن اور ادا شدہ انکم ٹیکس کے حوالے سے بڑا فرق سامنے آگیا۔ عارف علوی نے ایف بی آر کو گزشتہ تین برسوں کے دوران اصل آمدن کی نسبت کہیں کم ٹیکس ادا کیا۔ ایف بی آر کے مطابق عارف علوی نے 2015کے دوران 30لاکھ 95ہزار روپے کی آمدن پر 3لاکھ63ہزار روپے انکم ٹیکس ادا کیا۔ کاغذات نامزدگی کے مطابق عارف علوی نے 2015میں 77لاکھ 26ہزار روپے کی آمدن پر 20لاکھ 30ہزار روپے انکم ٹیکس ادا کیا۔ ایف بی آر کے ریکارڈ کے مطابق عارف علوی نے 2016میں 53لاکھ 56ہزار روپے کی آمدن پر 20لاکھ 15ہزار روپے انکم ٹیکس ادا کیا ۔ کاغذات نامزدگی کے مطابق عارف علوی نے 2016میں 87لاکھ 90ہزار روپے کی آمدن پر 11لاکھ 37ہزار روپے انکم ٹیکس ادا کیا۔ ایف بی آر کے ریکارڈ کے مطابق عارف علوی نے 2017میں آمدن ظاہر کی نہ ہی انکم ٹیکس اد ا کیا اور نہ ہی ریٹرن فائل کی۔ جبکہ کاغذات نامزدگی کے مطابق عارف علوی نے 2017میں 94لاکھ 38ہزار روپے کی آمدن پر 11لاکھ 39ہزار روپے انکم ٹیکس ادا کیا۔

عارف علوی کا مکمل نام ڈاکٹر عارف الرحمن علوی ہے۔ عارف علوی دانتوں کے سرجن ہیں لیکن خود کو ڈاکٹر کہلانا پسند نہیں کرتے۔ عارف علوی نے کاغذات نامزدگی پر اپنے نام کے ساتھ لکھا لفظ ڈاکٹر ہاتھ سے کاٹ دیا۔  عارف علوی کے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ بھی قائم ہے جو انسداد دہشت گردی عدالت اسلام آباد میں زیر التوا ہے۔