میکسیکو میں ’مردہ لوگوں کے دن‘ کی تقریبات میں ہزاروں افراد کی شرکت

سنیچر کو میکسیکو میں ایک پریڈ منعقد

سنیچر کو میکسیکو میں ایک پریڈ منعقد کی گئی جس میں مردہ لوگوں کے لیے منائی جانے والی سالانہ تقریبات کا آغاز کیا گیا۔ یہ پریڈ پہلی مرتبہ 2016 میں منعقد کی گئی تھی۔

سنیچر کو میکسیکو میں ایک پریڈ منعقد کی گئی جس میں مردہ لوگوں کے لیے منائی جانے والی سالانہ تقریبات کا آغاز کیا گیا۔ یہ پریڈ پہلی مرتبہ 2016 میں منعقد کی گئی تھی اور اس کا خیال بھی جیمز بانڈ سیریز کی فلم ’سپیکٹر‘ سے لیا گیا تھا جس میں تقریباً ایک ایسا ہی سین فلمایا گیا تھا۔

منتظمین کو امید ہے یہ پریڈ سیاحوں کو اپنی طرف مدعو کرنے میں بڑی کارگر ثابت ہو گی۔ اور جو سیاح مقامی تقریبات دیکھنا چاہتے ہیں وہ اس طرف کھنچے چلے آئیں گے۔

اس سال کی پریڈ کا مرکزی خیال ہجرت تھا۔ شہری حکومت نے پریڈ کو ان مہاجرین کے نام کیا جو ’ٹرانزٹ‘ کے دوران ہلاک ہو گئے۔ اس وقت بھی مرکزی امریکہ میں ہزاروں افراد کاروان کی شکل میں ہجرت کر رہے ہیں۔

عموماً یہ پریڈ دو نومبر کو منعقد کی جاتی ہے جب خاندان اس دنیا سے چلے جانے والے اپنے پیاروں کو یاد کرتے ہیں۔ ان کا عقیدہ ہے کہ ان کی روحیں زمین پر واپس لوٹتی ہیں۔ میکسیکو کے علاقے میں یہ رسم کئی مختلف طریقوں سے منائی جاتی ہے۔ کچھ لوگ اپنے پیاروں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لیے ان کی قبروں پر موم بتیاں جلاتے ہیں، کچھ ان کے پسندیدہ کھانے اور پھول پیش کرتے ہیں جبکہ دیگر اپنے گھروں میں ان کی خانقاہیں بناتے ہیں۔

کھوپڑیوں پر رنگ و روغن، رنگین کپڑے اور باڈی پینٹ بھی کیا جاتا ہے اور پوری دنیا میں ان تصاویر کو پسند کیا جاتا ہے۔

سنیچر کی پریڈ میں حصہ لینے والوں میں سے کئی ایک نے کھوپڑیاں پینٹ کر کے ان پر رنگا رنگ پوشاک پہن رکھی تھی۔

بوندا باندی کے باوجود میکسیکو سٹی میں ہونے والی تقریبات میں ہزاروں افراد نے حصہ لیا اور اس پریڈ کو ٹیلی ویژن پر براڈکاسٹ بھی کیا گیا۔

مقامی میڈیا کے مطابق اس رنگا رنگ اور موسیقی سے بھرپور پریڈ میں 1200 رضاکاروں نے حصہ لیا۔

میکسیکو کی ممتاز شخصیات کو بھی خراجِ تحسین پیش کیا گیا جن میں گلوکارہ شاویلا وارگاس اور آرٹسٹ فریدہ کاہلو بھی شامل ہیں۔

پریڈ میں خطے کے ماضی کو سراہا گیا جس میں ایزٹیک روایت کے مطابق انسانوں کی قربانی اور مرکزی امریکہ میں سب سے پہلے آنے والے افراد کے راستے بھی شامل ہیں۔

اسی طرح کی ایک پریڈ مغربی میکسیکو کے شہر گواڈالاجارا میں بھی منعقد کی گئی۔

منتظمین اس ایونٹ کے لیے ہزاروں افراد کے مجمع کی امید کر رہے تھے، جس میں لائیو موسیقی اور کرتب بھی شامل تھے۔