غیر جمہوری اور آمریت کی سوچ سے جمہوریت کو خطرہ ہے، امیر جماعت اسلامی

فائل فوٹو

لاہور(اے ٹی ایم نیوز آن لائن) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کا کہنا ہے کہ ملک میں حقیقی جمہوریت کے لیے افراد کے بجائے جمہوری اداروں کااستحکام ضروری ہے۔
انہوں نے کہا کہ غیر جمہوری اور آمریت کی سوچ رکھنے والی جماعتوں نے جمہوریت کو سب سے زیادہ نقصان پہنچایا ہے۔ سربراہ جماعت اسلامی نے کہا کہ جمہوریت کی راہ میں اصل رکاوٹ خاندانوں، لسانیت اور شخصیت کے گرد گھومنے والی جماعتیں ہیں۔ جمہوری نظام کے استحکام کے لیے سیاسی جماعتوں کو اپنے اندر جمہوریت لانا ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی میں مضبوط جمہوری عمل کے بعد پارٹی سربراہ چنا جاتا ہے۔ دو سال بعد ضلعی، تین سال بعد صوبائی اور پانچ سال بعد جماعت کے مرکزی امیر کا انتخاب ہوتا ہے.
قومی یکجہتی اور اتحاد کے لیے فرقہ وارانہ، لسانی اور گروہی تعصبات سے نکلنا ہوگا۔