تیونس، خاتون خودکش بمبار نے خود کو دھماکا خیز مواد سے اڑا لیا، 9 افراد زخمی

فوٹو: اے ایف پی

تیونس (اے ٹی ایم نیوز آن لائن) تیونس کے دارالحکومت میں خاتون خودکش بمبار نے خود کو دھماکا خیز مواد سے اڑا لیا، جس کے نتیجے میں 9 افراد زخمی ہوگئے۔
برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق وزارت داخلہ نے دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ حبیب بورگیوبا ایونیو کے قریب ہونے والے دھماکے میں 8 پولیس اہلکار اور ایک شہری زخمی ہوا۔

وزارت داخلہ نے میونسپل تھیٹر کے قریب ہونے والے دھماکے کو دہشت گردی قرار دیا۔
واقع کے فوری بعد کسی شخص کی ہلاکت کی تصدیق نہیں کی گئی۔

خیال رہے کہ مذکورہ دھماکا ایسے موقع پر کیا گیا جب کئی سالوں بعد ملک کی سیاحت کی صنعت دوبارہ سے پروان چڑھ رہی تھی جو 3 سال قبل دو دھماکوں کی وجہ سے زوال پذیر کا شکار ہوگئی تھی۔

مارچ 2015 میں ہونے والے دھماکے میں 22 افراد ہلاک جبکہ اس کے کچھ ماہ بعد ہونے والے دھماکے میں 38 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔
حالیہ دھماکے کے بعد مقامی میڈیا میں نشر ہونی والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ امدادی رضا کار بڑی تعداد میں جائے وقوع پر موجود ہیں۔
رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ جس مقام پر دھماکا ہوا، وہ فرانس کے سفارت خانے سے 200 میٹر کے فاصلے پر قائم ہیں۔
دھماکے کے فوری بعد سیکیورٹی اہلکاروں نے جائے وقوع کو گھیرے میں لے لیا تھا اور کسی کو بھی اس مقام کی جانب جانے کی اجازت نہیں تھی۔