میانوالی سے تعلق کا یہ مطلب نہیں کہ جنرل نیازی اور عمران خان کی رشتہ داری ہے، وفاقی وزیر خزانہ

فائل فوٹو

اسلام آباد (اے ٹی ایم نیوز آن لائن) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے واضح کیا ہے کہ جنرل نیازی کی وزیر اعظم عمران خان سے کوئی رشتہ داری اور کوئی تعلق نہیں تھا۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کے دوران اسد عمر نے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن کے جنرل نیازی اور عمران خان سے متعلق حالیہ بیان پر کہا کہ ‘جنرل نیازی میانوالی سے ضرور تھے لیکن ان کی عمران خان سے کوئی رشتہ داری نہیں تھی۔’

اپنے والد کے حوالے سے مولانا فضل الرحمٰن کے بیان پر انہوں نے کہا کہ ‘پتہ نہیں مولانا کو کس نے گمراہ کیا، میں واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ 1971 کی جنگ میں میرے والد جنرل آفیسر کمانڈنگ ڈویژن کمانڈر 23 ڈویژن تھے اور جھمب جوڑیاں کے مقام پر تعینات تھے۔’

ان کا کہنا تھا کہ ‘جنگ کے دوران پاکستان نے توی کا دریا پار کیا اور جھمب پر قبضہ کیا جو آج بھی پاکستان کا حصہ ہے، اگر مولانا دیکھنا چاہتے ہیں تو میں ان کو وہاں لے جاکر دکھا سکتا ہوں جبکہ اس کا جنگ میں سرینڈر سے کوئی تعلق نہیں۔’

واضح رہے کہ چند روز قبل پریس کانفرنس کے دوران مولانا فضل الرحمٰن نے کہا تھا کہ ‘ابھی تو اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس (اے پی سی) تجویز کے مرحلے میں ہے اور عمران خان کے اوسان خطا ہوگئے ہیں اور ان کا لب و لہجہ ایسا ہے جیسا انہوں نے قوم کو فتح کیا ہو۔’

ان کا کہنا تھا کہ ‘ہم عمران خان کے خاندان کی روایت کو جانتے ہیں، ان کی روایت ہتھیار ڈالنے کی ہے ہتھیار اٹھانے کی نہیں، 1971 میں جنرل نیازی کے ساتھی جنرل عمر تھے اور عمران خان کے ساتھی اسد عمر ہیں۔’