ایل او سی پر بھارتی فورسز کی شیلنگ، ایک نوجوان جاں بحق

فائل فوٹو

مظفر آباد(اے ٹی ایم نیوز آن لائن) لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے اس پار سے آزاد کشمیر کے لیپا ویلی میں بھارتی فورسز کی شیلنگ سے ایک نوعمر بچہ بحق ہوگا۔

اس حوالے سے بتایا گیا کہ بھارت کی بلا اشتعال شیلنگ سے جاں بحق ہونے والے کی شناخت 18 سالہ ہارون ولد راشد کے نام سے ہوئی۔
ہٹیاں بالا کے ڈپٹی کمشنرعمران شاہین نے ڈان کو بتایا کہ بھارت کی جانب سے شیلنگ کا سلسلہ شام 4 بجے شروع ہوا اور کیئے کھنٹے تک جاری رہا۔

انہوں نے بتایا کہ تاریکی اور ناقص ٹیلی کمیونیکیشن کے باعث مزید مالی اور جانی نقصان کے بارے میں وثوق سے نہیں کہا جا سکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارتی شیلنگ رکنے کے بعد ہی نقصان سے متعلق تفصیلات موصول ہوں گی۔
لیپا ویلی میں پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما شوکت جاوید میرنے بتایا کہ شیلنگ بہت زیادہ تھی جس کی وجہ سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ لوگوں نے اپنے گھروں سے ساتھ تعمیر بنکرز اور خندق میں پناہ لی اور ہم ان سے رابطہ بحال کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔
شوکت جاوید نے بتایا کہ صبح کے اوقات میں ایک گھنٹہ شیلنگ رہی جو صرف پوسٹ سے پوسٹ تک محدود تھی۔

واضح رہے کہ لیپا ویلی میں بھارتی شیلنگ سے رواں برس فروری میں ایک نوعمر لڑکا شدید زخمی ہو گیا تھا۔
اس سے قبل گزشتہ برس 24 اکتوبر کو لیپا ویلی میں ہی بھارتی شیلنگ سے ایک خاتون اور نوعمر لڑکی جاں بحق اور 6 شہری زخمی ہو گئے تھے۔

اس کے علاوہ اسی ویلی میں 21 جولائی کو ایک نوعمر بچہ جاں بحق اور اس کے خاندان کے تین افراد زخمی ہو گئے تھے۔
گزشتہ برس ہی 8 جون کو ایک ہی خاندان کے چار افراد بھارتی شیلنگ سے زخمی ہو گئے تھے۔